دنیا کے سب سے بلند نشریاتی ٹاور ٹوکیو اسکائی ٹری کی تعمیر مکمل

 

جاپان میں دنیا کے سب سے بلند نشریاتی ٹاور ٹوکیو اسکائی ٹری کی تعمیر مکمل ہوگئی ہے۔ تکمیل کے موقع پر جمعہ 2 مارچ کو ٹاور کی پہلی منزل پر ایک تقریب منعقد کی گئی، جس میں شنتو مت کی مذہبی رسومات ادا کی گئیں ۔

ٹوکیو اور گردونواح میں ڈیجیٹل ٹی وی نشریات کے لیے تعمیر کردہ ٹوکیو اسکائی ٹری کی بلندی 634 میٹر ہے، اور یہ دنیا کا سب بلند نشریاتی ٹاور ہے۔تقریباً 32 ہزار مربع میٹر رقبے پر تعمیر کئے گئےٹاور کی 29 منزلیں ہیں ۔ ارد گرد کا فضائی نظارہ کرنے کے لیے زمین سے 350 میٹر کی بلندی پر بنائے گئے ڈیک میں ایک ریستوران بھی بنایا گیا ہے۔ موسم صاف ہونے کی صورت میں اس ڈیک سے، ٹاور سے 70 کلومیٹر دور تک کا منظر دکھائی دیتا ہے۔ڈیک پر جانے کے لیے 4 تیز رفتار لفٹیں ہیں۔ ہر لفٹ کی گنجائش 40 افراد ، جبکہ رفتار 600 میٹر فی منٹ ہے۔ 450 میٹر کی بلندی پر بنائے گئے شیشے کےدوسرے ڈیک کا ڈیزائن اس طرح کا ہے، کہ وہاں چلنے والا فرد ، خود کو فضا میں چہل قدمی کرتا ہوا محسوس کرے گا۔ پہلے ڈیک سے دوسرے ڈیک پر جانے کے لیے چالیس چالیس افراد کی گنجائش والی 2 لفٹیں ہیں، جن کی رفتار 240 میٹر فی منٹ ہے۔

ٹوکیو اسکائی ٹری کی تعمیر 14جولائی سنہ 2008 کو شروع ہوئی تھی، جو 29 فروری سنہ 2012 کو تکمیل تک پہنچی ۔ زلزلے اور تیز ہواؤں کی صورت میں  بھی ارتعاش کم سے کم ہونے والے ڈیزائن کے حامل، اس ٹاور کی تعمیر پر 65 ارب ین (65 بلین ین یا تقریباً 80 کروڑ ڈالر) کی لاگت آئی ہے۔ اس کی تعمیر میں 5 لاکھ 80 ہزار افراد نے حصہ لیا، اور اس کی تعمیر بغیر کسی جان لیوا حادثے کے مکمل ہوئی ہے۔

ٹوکیو کے سُمیدا ضلعے (Sumida-ku)میں واقع ٹوکیو اسکائی ٹری ، توبُو ریلوے (Tobu Railway)  کی ایک ذیلی کمپنی، توبُو ٹاور اسکائی ٹری کمپنی  کی ملکیت ہے۔ اسے عوام کے لیے 22 مئی سے کھولا جائے گا، تاہم 10 جولائی تک صرف پہلے سے ریزرویشن کروائے ہوئے افراد ہی اس میں داخل ہوسکیں گے۔ قریب ترین اسٹیشن توبُو اِسےساکی لائن (Tobu Isesaki Line) کا ناری ہیرا باشی (Narihirabashi) اسٹیشن ہے۔