جاپان کا پہلا GPS مصنوعی سیارہ ’میچی بیکی ‘ خلا میں روانہ ۔

 

جاپان کے خلائی تحقیق کے ادارے جاکسا (JAXA) نے ، جاپان کا پہلا GPS مصنوعی سیارہ ، خلا میں روانہ کردیا  ہے۔ میچی بیکی (Michibiki) یا ’رہنمائی‘ نام کا یہ مصنوعی سیارہ ، ہفتے کی شب مغربی جاپان میں واقع تانے گا شیما (Tanega-shima) خلائی مرکز سے H2A  راکٹ کے ذریعے روانہ کیا گیا ۔ کرہ ارض کی حدود سے نکلنے کے بعد ، وہ کامیابی سے راکٹ سے الگ ہو کر، اپنے مقررہ مدار میں گردش کرنے لگا ہے ۔

گلوبل پوزیشننگ سسٹم (GPS) زمین پر کسی بھی مقام کی درست نشاندہی کا مقام ہے ، اور یہ بنیادی طور پر فوجی مقاصد کے لئے وضع کیا گیا تھا ۔ تاہم اب اسے بحری و ہوائی جہازوں اورگاڑیوں وغیرہ کے نیوی گیشن نظام سمیت کئی غیر فوجی شعبوں میں استعمال کیا جارہا ہے ۔دنیا بھر کے GPS آلات ، اب تک  امریکی GPS مصنوعی سیاروں سے نشر ہونے والے سگنلوں پر انحصار کرتے ہیں ۔ امریکی نظام کی مقام کے تعین کی درستگی دس میٹر ہے ۔ گویا دوسرے الفاظ میں کسی مقام کے تعین میں دس میٹر تک کی غلطی کی گنجائش ہے ۔ اس کے علاوہ یہ نظام بلندوبالا عمارات کے درمیان ، یا پہاڑی علاقوں میں درست طور پر کام نہیں کرتا ۔

جاپانی GPS مصنوعی سیارے کا نظام ان خرابیوں کو دور کرنے کے لئے تیار کیا گیا ہے ، اور اس میں مقام کے تعین کی درستگی ایک میٹر تک ہے ۔

جاپان کے GPS نظام کو مکمل استعمال میں لانے کے لئے میچی بیکی کے علاوہ ، دیگر دو مصنوعی سیاروں کی بھی ضرورت پیش آئے گی ، جو خلائی تحقیقی ادارہ  جاکسا، عنقریب خلا میں بھیجنے گا ۔